1. Skip to Menu
  2. Skip to Content
  3. Skip to Footer>

مرکز اھلسنت والجماعت کا شعبہ تعلیمات

PDF Print E-mail

شعبہ تعلیمات

۱۔            تخصص فی التحقیق و الدعوة                          

۲۔           سالانہ دورہ تفسیر القرآن الکریم

۳۔           سالانہ صراط مستقیم کورس

۴۔           ماہانہ تین روزہ دورہ تحقیق المسائل

۵۔           تجوید وقراءت وتحفیظ القرآن الکریم

۶۔           اصلاح النساء

۷۔           شعبہ کمپیوٹر

(ا)           ٹریننگ

(ب)       کمپوزنگ

(ج)        WEBSITES AND ONLINE ACTIVITIES

 

                اہتمام کے بعد یہ شعبہ بڑی اہمیت کا حامل ہے۔ یہ شعبہ چند ذیلی شعبہ جات پر منقسم ہے جن کی تفصیل درج ذیل ہے:

۱۔      تخصص فی التحقیق و الدعوة

کوئی انہیں رائیگاں نہ سمجھے انہی سے رونق ہے گلستان کی

یہ غنچہ ہائے بدن دریدہ یہ چاک داماں سے لوگ ساقی

                مدارس دینیہ سے فارغ التحصیل علماءکرام میں تحقیقی ذوق بیدار کرنے اور ان کی دعوتی صلاحتیوں میں نکھار پیداکرنے کی خاطر مرکز اہل السنت والجماعت میں اپنی طرز کا منفرد تخصص بحمد اللہ تعالیٰ بڑی کامیابی سے گذشتہ چار سال سے جاری ہے۔ علماءکرام کو ایک سالہ دورانیہ کے اس تخصص میں اسماءالرجال، اصول تفسیر، اصول حدیث، اصول فقہ، اصول مناظرہ، اصول تحقیق اور دیگر علوم و فنون کی تہہ تک غوطہ زنی کے قابل بنایا جاتا ہے۔

                 میدان عمل کے فرسان، بحر تحقیق کے شناور، اخلاق نبوت سے متصف، صحابہ رضی اللہ عنہم کے روحانی فرزند اور فقہاءو سلف صالحین کی تابندہ تاریخ کے نقوش کی جھلک پیش کرتے اساتذہ اور طلبہ بفضل اللہ تعالیٰ احقاق حق اور ابطال باطل کے فریضہ کی بجا آوری میں شبانہ روز مصروف ہیں۔ مرکز اہل السنت کے ارباب بست و کشاد نے التخصص فی التحقیق و الدعوة کو جس نہج پر گامزن رکھا ہوا ہے اس کی مثال ڈھونڈے نہ ملے گی۔

ایں سعادت بزور بازو نیست

تا  نہ  بخشد  خدائے  بخشندہ

                التخصص فی التحقیق والدعوة کا آغاز ۱۴۲۷ھ میں ہوا اور اس سال پندرہ (۱۵ )فارغ التحصیل علماءکو داخلہ دیا گیا۔ ۱۴۲۸ھ میں تخصص کے طلبہ کی تعداد بیس(۲۰) تک جا پہنچی۔ ۱۴۲۹ھ میں اکتالیس(۴۱) علماءکرام التخصص فی التحقیق و الدعوة کی کلاس میں شریک ہوئے اور امسال ۱۴۳۰ھ میں الحمدللہ اکسٹھ (۶۱) فارغ التحصیل علماءکرام التخصص فی التحقیق والدعوة میں شریک ہیں۔ علماءکرام کی اتنی بڑی تعداد کی تخصص میں شرکت جہاں مرکز اھل السنت والجماعت کی عند اللہ مقبولیت پر دلالت کرتی ہے وہیں مرکز کی عند الصلحاءو اھل اللہ محبوبیت اور متکلم اسلام مولانا محمد الیاس گھمن دامت برکاتہم کی شبانہ روز انتھک محنت کا پتہ بھی دیتی ہے۔

۲۔     سالانہ دورہ تفسیر القرآن الکریم

یہ  راز  کسی  کو  نہیں  معلو م کہ  مومن

قاری نظر آتا ہے حقیقت میں ہے قرآن

                اللہ تبارک و تعالیٰ نے جناب نبی اکرم ﷺ کو سب انبیاءعلیہم السلام کے آخر میں بھیجا اور ختم نبوت کا تاج آپ ﷺکے سر پر رکھا۔ آقا علیہ الصلوة و السلام کو آخری کتاب قرآن مجید عطا کی گئی اور قیامت تک آنے والے انسانوں کے لیے اس مقدس کتاب کو دستور العمل اورنظام حیات قرار دیا گیا۔ جناب نبی کریم ﷺ نے اپنے اقوال و افعال سے قرآن کریم کی تشریح و تفسیر کا فریضہ سر انجام دیا۔

                صحابہ کرام رضی اللہ عنہم نے اس مبارک امانت کو آقا علیہ السلام سے لیا اور پوری دیانت اور ذمہ داری کے ساتھ آگے منتقل کر دیا۔ یہ سلسلة الذہب بحمداللہ آج تک قائم ہے اور تاقیامت پوری مضبوطی سے قائم رہے گا۔ جناب نبی کریم ﷺ کے سچے اور حقیقی ورثاءعلمائے اہل السنت والجماعت ہی قرآن کریم کی درست تشریحات و تعبیرات کے امین ہیں۔ قرآن کریم کی وہی تفسیر معتبر ہو گی جو جناب نبی کریم ﷺ، صحابہ کرام رضی اللہ عنہم اور سلف صالحین سے مروی ہوگی۔

                بحمد اللہ تعالیٰ مرکز اہل السنت والجماعت کے زیر اہتمام مدارس دینیہ کی سالانہ چھٹیوں میں چالیس روزہ دورہ تفسیر القرآن العظیم پڑھایا جاتا ہے۔ ربط آیات و سور ،شان نزول، مشکلات القرآن، صرفی، نحوی اور لغوی مباحث، رد فرق باطلہ، اصول مناظرہ اور اصول دعوت دورہ تفسیر کے چند اہم مباحث ہیں۔ دورہ تفسیر میں علماءاور مدارس دینیہ کے طلبہ کو داخلہ دیا جاتا ہے۔ اسکولز اور کالجز کے اساتذہ کرام بھی شرکت کے اہل ہیں جبکہ عوام الناس بطور سامع دورہ تفسیر میں شریک ہو سکتے ہیں۔

                دورہ تفسیر کے روح رواں تلمیذ خاص حضرت اوکاڑوی رحمہ اللہ، استاذ الحدیث و التفسیر حضرة مولانا منیر احمد منور دامت برکاتہم ہیں، علاوہ ازیں ملک بھر سے نامور علماءبھی وقتا فوقتا تشریف لاتے اور طلبہ کو نور علم سے منور فرماتے ہیں۔ دورہ تفسیر کے اختتام پر شرکاءکا باقاعدہ امتحان لیا جاتا ہے اور مرکز کی طرف سے سند جاری کی جاتی ہے۔ اختتامی تقریب میں اکابر علماءکرام تشریف لاتے ہیں اور طلبہ کی دستار بندی کرتے ہیں۔

مرکز اہل السنت والجماعت میں منعقد شدہ دورہ ہائے تفسیر کے شرکاءکی تعداد حسب ذیل ہے:

 

سال                        شرکاء

1424ھ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔105

1425ھ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔135

1426ھ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔106

1427ھ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔097

1428۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔120

1429ھ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔108

1430ھ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔105

 

میری مشاطگی کی کیا ضرورت حسن معانی کو

کہ فطرت خود بخود کرتی ہے لالہ کی حنا بندی

 

۳۔     سالانہ صراط مستقیم کورس

لگا   رہا  ہوں  مضامین  نو  کے  پھر  انبار

خبر کرو میرے خرمن کے خوشہ چینوں کو

                مرکز اہل السنت والجماعت کے زیر انتظام عصری تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم طلبہ کی دینی اور فکری تعلیم و تربیت کے لیے موسم گرما کی تعطیلات میں چالیس روزہ صراط مستقیم کورس کی ترتیب بنائی گئی ہے۔ طلبہ چالیس یوم تک شب و روز مسلسل مدرسہ کے بابرکت ماحول میں رہتے ہیں اور فرمان نبوی صلی اللہ علیہ وسلم

من اخلص للہ اربعین یوما ظہرت ینابیع الحکمة من قلبہ علی لسانہ

(جس شخص نے اللہ تبارک و تعالیٰ کے لیے چالیس دن وقف کیے،

 حکمت کے چشمے اس کے دل سے زبان کے رستے جاری ہو جاتے ہیں)

کا مصداق بنتے ہیں ۔

                دوران کورس طلبہ کو وہ مسائل سکھلائے جاتے ہیں جو روزہ مرہ کی زندگی میں پیش آتے ہیں۔ عقائد و نظریات کی درستگی پر خصوصی توجہ دی جاتی ہے اور قرآن کریم کی صحیح تلفظ کے ساتھ ادائیگی کے سکھلانے کا بھی اہتمام کیا جاتا ہے۔ صراط مستقیم کورس میں سکولز اور کالجز کے طلبہ کے علاوہ عصری تعلیمی اداروں کے اساتذہ اور دیگر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد بھی شرکت کرتے ہیں۔

                 مرکز اہل السنت و الجماعت کے زیر اہتمام پہلا سالانہ صراط مستقیم کورس 2003ءمیں منعقد کیا گیا جس میں تینتیس (33)افراد نے شرکت کی۔ 2004ءمیں سرسٹھ(67)، 2005ء میں بانوے(92)، 2006ءمیں اکہتر (71) اور 2007ءمیں ستاسی (87)افراد کورس میں شریک ہوئے۔ 2008ءمیں صراط مستقیم کورس کا دائرہ کار وسیع کیا گیا اور مرکز کے علاوہ دیگر مقامات پر بھی مرکز اہل السنت والجماعت کے زیر انتظام یہ کورسز منعقد کیے گئے۔ سال 2008ءمیں مختلف شہروں اور قصبات میں ہونے والے ان کورسز میں چھ سو(600) سے زائد افراد نے شرکت کی۔ 2009ءمیں صراط مستقیم کورس کو مزید وسعت دی گئی اور ایک منظم طریقہ کار کے تحت ملک بھر میں مدارس کے علاوہ سکولز اور کالجز میں بھی کورس کا انعقاد کیا گیا۔ جبکہ امسال 2010 میں ملک بھر میں تقریباً ایک ہزار مقامات پر صراط مستقیم کورسز کا انعقاد ہوا۔ متکلم اسلام مولانا محمد الیاس گھمن دامت برکاتہم نے مرد حضرات کے ساتھ ساتھ خواتین کے لیے بھی علیحدہ سے کورس ترتیب دیا ہے اور یہ دونوں  کورسز  احناف میڈیا  سروس کی کاوش سے  الحمدللہ اب کتابی شکل میں چھپ کر سامنے آچکے ہیں۔ یہ کورسز منگوانے اور دیگر تفصیلات کے لیے مکتبہ اہل السنت سے رابطہ کیا جاسکتا ہے۔ 

صراط مستقیم کورس کی وسعت اور اس کی عوام الناس میں مقبولیت کا اندازہ اس سے لگایا جاسکتا ہے کہ صرف ضلع فیصل آباد میں 2009 میں دو سو تیس 230 سے زیادہ مقامات پرصراط مستقیم کورس کا انعقاد ہوا۔اورصرف فیصل آباد پر ہی موقوف نہیں الحمدللہ کراچی تا پشاور اور کوئٹہ تا مانسہرہ مرکز اھل السنت والجماعت کی زیر نگرانی اور مقامی علماءکی مشاورت اور تعاون سے صراط مستقیم کورسز منعقد کیے گئے۔ الحمدللہ ان کورسز میں کثیر تعداد میں سکولز اور کالجز کے طلباءکے علاوہ زندگی کے دیگر شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے شرکت کی ۔ 

فللہ الحمد

 

 

۴۔     ماہانہ تین روزہ دورہ تحقیق المسائل

مجھ کو ماحول  کی ظلمت سے سروکار نہیں

کیا ستارے میرے احساس کے بیدار نہیں

                عصر حاضر میں گمراہ ادارے اور بے دین فرقے باطل نظریات پھیلا کر نوجوان امت کے اذہان کو پراگندہ اور دین سے دور کرنے کی کوششوں میں مسلسل مصروف ہیں۔ دین متین کی بنیادوں پر ضربیں لگانے کے لیے متفرق ذرائع و وسائل اور کئی طرح کی دھوکہ دہیوں کو بروئے کار لایا جا رہا ہے۔مذہب کا نام استعمال کر کے مذہب سے متنفر کرنے کی ناپاک سازشوں کے سدباب کے لیے مرکز اہل السنت و الجماعت کے زیر اہتمام تین روزہ دورہ تحقیق المسائل کا آغاز کیا گیا ہے۔

                 ہر انگریزی مہینے کی پہلی جمعرات کو نماز مغرب سے تین روزہ دورہ کا آغاز ہوتا ہے اور اتوار کو قبل از ظہر اختتامی دعا کے ساتھ ہی دورہ تحقیق المسائل اختتام پذیر ہو جاتا ہے۔ اہل السنت و الجماعت کے متفقہ عقائد و نظریات اور مسائل  سےآگاہی تین روزہ دورہ تحقیق المسائل کا طرہ امتیاز ہے۔

                مرکز اہل السنت و الجماعت کے زیر اہتمام پہلا دورہ تحقیق المسائل دسمبر 2008ءمیں منعقد ہوا اور بحمد اللہ تاحال یہ سلسلہ بڑی کامیابی کے ساتھ جاری وساری ہے۔

۵۔     تجوید وقراءت وتحفیظ القرآن الکریم

                اللہ تبارک و تعالیٰ نے قرآن کریم کی حفاظت کا ذمہ خود لیا ہے اور دارالاسباب میں اس کا انتظام یوں کیا کہ اوراق کے ساتھ ساتھ اس کتاب مقدس کو سینوں میں بھی محفوظ کر دیا ہے۔ تمام آسمانی کتابوں میں یہ اعزاز صرف قرآن کریم ہی کو حاصل ہے کہ ہر دور میں ہر علاقے، ہر خطے، ہر عمر اور ہر رنگ و نسل کے مسلمانوں کے قلوب میں یہ بابرکت کلام محفوظ رہا ہے۔ مدارس میں تحفیظ القرآن الکریم کا شعبہ اسی روشن اور سنہری سلسلے کی کڑی ہے۔

                 مرکز اہل السنت و الجماعت کے شعبہ تحفیظ القرآن الکریم میں طلبہ کی تعداد پینتالیس سے زائد ہے۔ ایک مشاق، مجود قاری صاحب شب و روز طلبہ کے سینوں کو نور قرآنی سے منور کرنے میں مصروف ہیں۔ منزل کی پختگی، مخارج کی صحت، ادائیگی کی درستگی اور لہجہ کی عربیت کا خصوصی لحاظ رکھا جاتا ہے۔ طلبہ کی اخلاقی تربیت پر بھی خاص توجہ دی جاتی ہے، اصلاحی بیانات اور محافل ذکر میں طلبہ پابندی سے شریک ہوتے ہیں۔ بحمداللہ تعالیٰ مرکز اہل السنت و الجماعت کے طلبہ مثالی اخلاق و کردار کا نمونہ ہیں۔

۶۔     اصلاح النساء

مرکز کے شعبہ اصلاح النساءکے تحت خواتین کی دینی و اخلاقی تربیت کا ادارہ قائم ہے۔ خواتین کی علمی و عملی تربیت کے ساتھ ساتھ گھریلو امور کی انجام دہی کا سلیقہ بھی سکھلایا جاتا ہے۔



۷۔     شعبہ کمپیوٹر

                آج کے تیز رو دور میں کمپیوٹر کا وجود انسانی زندگی کا ایک جزو بن کر رہ گیا ہے۔ یہ میڈیائی جنگ میں اہل حق کا مضبوط ہتھیار ہے۔ اسی وجہ سے علماءکرام کو عصر حاضر کے اس اہم تقاضے سے ہمکنار کرنے کے لیے اس کی تعلیم پر باضابطہ طور پر زور دیا جاتا ہے۔ یہ شعبہ تین ذیلی شعبوں پر تقسیم کیا گیا ہے۔

(ا)۔ٹریننگ

                علماءکو کمپیوٹر سے متعلقہ امور کی تربیت کے لیے یہ شعبہ قائم کیا گیا ہے۔ فی الحال یہ شعبہ وسائل کی کمی کی وجہ سے صحیح معنوں میں فعال نہیں ہو سکا ۔ تاہم دستیاب وسائل کے اندر رہتے ہوئے کافی حد تک اس پر کام جاری ہے۔ تخصص کے علماءکی تعداد بحمد اللہ ساٹھ60  سے زائد ہے اور ان کے لیے کافی بڑی کمپیوٹر لیب کی ضرورت ہے۔

(ب)۔کمپوزنگ

                کتابوں کی کمپوزنگ، ڈیزائننگ اوردیگر متعلقہ امور اس شعبہ کے تحت آتے ہیں۔

(ج)۔WEBSITES AND ONLINE ACTIVITIES

                علماءحق کے پیغام کو پوری دنیا میں پھیلانے اور جدید وسائل کو استعمال کرتے ہوئے عوام کے عقائد کے تحفظ کی خاطر مرکز اہل السنت والجماعت نے اپنی کئی ویب سائٹس لانچ کی ہیں۔ ان ویب سائٹس پر دروس قرآن و حدیث، علماء کے اصلاحی و علمی بیانات اور کتب و رسائل دستیاب ہیں۔


           مرکز کی آن لائن میڈیا سروس سے فائدہ اٹھانے کیلئےایڈریس درج ذیل ہیں۔

www.alittehaad.org

www.islahunnisa.com

www.alittehaad.blip.tv

www.archive.org/details/alittehaad

www.youtube.com/user/alittehaad

www.alittehaad.blogspot.com

www.twitter.com/alittehaad

تمام حضرات کی خدمت میں گذارش ہے کہ اگر آپ کو سائیٹ Exploreکرتے ہوئے کوئی Errorنظر آئے تو Contact Usکے پیچ پر جا کر ہمیں اس سے ضرور مطلع فرمائیں۔ اورمزید اپنی آراء سے ہمیں مطلع فرمائیں تاکہ سائیٹ کو مزید بہتر کیا جا سکے۔